لازمی ہے کہ ہم عراق اور خاص کر شہیدوں کے یتیموں کو فراموش نہ کریں وہ دین،عراق کی عزت اور فخر ہیں۔

لازمی ہے کہ ہم عراق اور خاص کر شہیدوں کے یتیموں کو فراموش نہ کریں وہ دین،عراق کی عزت اور فخر ہیں۔

17/1/2019




مرجع مسلمین و جہانِ تشیّع حضرت آیة الله العظمیٰ الحاج حافظ بشیرحسین نجفی دام ظله الوارف نے مرکزی دفتر نجف اشرف میں بصرہ سے زیارت کو آئے مؤمنین کے وفد سے اپنے خطاب میں خدا کی رضا کے حصول کے لئےنفس کے محاسبے، گناہوں سے پاکیزگی اور قلب طاہر وسلیم کے ساتھ خدا کی بارگاہ میں حاضری پر تاکید فرمائی۔
مرجع عالی قدر دام ظلہ الوارف نے بیان فرمایا کہ  لازمی ہے کہ اسلامی ثقافت و اقدار  اور اسلام کے احکام کے مطابق کہ جس کی ترغیب ہمیں ہمارے نبی ؐ اور اہلبیت علیہم السلام نے  دلائی ہے کے مطابق عمل کیا جائے جسمیں امر بالمعروف اور نہی عن المنکر اہمیت رکھتا ہے جسے کسی بھی صورت ترک نہیں کرنا چاہئے اسلئے کہ اسلام اور اسلامی معاشرےکے خلاف شدید حملےاور فکری انحرافات کورائج کرنےکی  کوششیں کی جارہی ہیں لہذا مؤمنین کو چاہئے  کہ اس کا ڈٹ کر مقابلہ کریں اور حقیقی اسلامی تعلیمات کو عام کریں۔
مرجع عالی قدر دام ظلہ الوارف نے مزید بیان فرمایا کہ لازمی ہے کہ ہم عراق اور خاص کرامنی تنظیموں کےشہیدوں کے یتیموں کو فراموش نہ کریں اسلئے کہ وہ دین، عراق کی عزت اور فخر ہیں اور ہم انکی خدمت میں جو بھی پیش کر سکتے ہیں اسمیں کوتاہی نہیں کرنا چاہئے اور ملحوظ نظر یہ رہے کہ اس خدمت کے دوران خضوع اور خشوع کے ساتھ ساتھ صرف رضائے الٰہی مد نظررہے اسلئے کہ ہماری جانب سے انکی خدمات کے باوجود وہ ہم پر صاحب فضل ہیں نہ کہ ہم ان پر۔
اپنی جانب سے آئے ہوئے وفد نے نصیحتوں اور ارشادات پر مرجع عالی قدر دام ظلہ الوارف  کا شکریہ ادا کیا۔

بھیجیں
پرنٹ لیں
محفوظ کریں