ایام فاطمیہ میں جلوسوں اور مجلس و ماتم کا اہتمام مذہب اہلبیت علیہم السلام کے صحیح عقائد کی تائید ہے

ایام فاطمیہ میں جلوسوں اور مجلس و ماتم کا اہتمام مذہب اہلبیت علیہم السلام کے صحیح عقائد کی تائید ہے

20/1/2019




مرجع عالی قدر حضرت آیۃ اللہ العظمیٰ الحاج حافظ بشیر حسین نجفی دام ظلہ الوارف کی رہبری اور حمایت میں، علمائے کرام، اساتذہ وطلاب حوزہ علمیہ نجف اشرف و کثیر تعداد میں عراقی قبیلوں کے سربراہان و مؤمنین نے حضرت فاطمہ زہراء علیہا السلام کی شہادت کا پرسہ و تعزیت پیش کرنےکی غرض سےمرکزی دفتر نجف اشرف سے برآمد ہوکر حرم حضرت امیر المؤمنین علی بن ابیطالب علیہما السلام میں اختتام پذیر ہوئے جلوسِ عزائے فاطمیہ میں شرکت فرمائی۔

غم و اندوہ میں ڈوبی صدائے لبیک یا زہرا ؑ، عظم اللہ لک الاجر یا صاحب الزمان عج، وعظم اللہ لک الاجر یا امیر المؤمنین ؑ کے ساتھ گذشتہ سالوں کی طرح امسال بھی مرکزی دفتر مرجع عالی قدر حضرت  آیۃ اللہ العظمیٰ الحاج حافظ بشیر حسین نجفی دام ظلہ الوارف سے،خود مرجع عالی قدر دام ظلہ الوارف کی رہبری و حمایت  اور موجودگی میں سوگواروں کا قافلہ پیدل چلتے ہوئے حرم حضرت امیر المؤمنین علیہ السلام تک پہنچا جہاں مجلس غم کا اہتمام کیا گیا۔

مرجع عالی قدر دام ظلہ الوارف کے فرزند اور مرکزی دفتر کے مدیر حجۃ الاسلام شیخ علی نجفی دام عزہ نے صحافیوں سے اپنے بیان میں فرمایا کہ مرجع عالی قدر دام ظلہ الوارف کا مؤمنین کے ساتھ شرکت فرمانے کا مقصدحضرت امیر المؤمنین علیہ السلام و حضرت امام زمانہ عج کی خدمت میں تعزیت پیش کرنے کے ساتھ ساتھ اس مشارکت سےصاف اور واضح پیغام دیناہے کہ اس عظیم مصیبت کہ جس میں جناب فاطمہ زہراء علیہا السلام کی شہادت ہوئی ان ایام کی یاد کو باقی رکھنا شعائر الٰہیہ کو باقی رکھنا ہے ساتھ ساتھ ایام فاطمیہ میں جلوسوں اور مجلس و ماتم کا اہتمام مذہب اہلبیت علیہم السلام  کے صحیح عقائد کی تائیدہے اور اسکو باقی رکھنا، ہر سال اس سے بہتر انداز میں منعقد کرنا، اسکی معنویت و آفاقیت و حقیقت کو پوری دنیا پر آشکار رکھنا  شعائر دینیہ کا اہم رکن ہے۔


بھیجیں
پرنٹ لیں
محفوظ کریں