مرجع عالی قدردام ظلہ الوارف کی خدمت میں آسٹریلیا کی سفیر ادیان سماویہ کےماننےوالوں کا ہدف الحاد کی روک تھام،انسان کا احترام،ظلم سے بیزاری اوراسکا قلع قمع ہونا چاہئے

مرجع عالی قدردام ظلہ الوارف کی خدمت میں آسٹریلیا کی سفیر ادیان سماویہ کےماننےوالوں کا ہدف الحاد کی روک تھام،انسان کا احترام،ظلم سے بیزاری اوراسکا قلع قمع ہونا چاہئے

29/3/2021




اقلیتوں کےحقوق کی حفاظت نہ کرنے کی تہمت عراق، نجف اشرف اوراسکی قدسیت کے حق میں گستاخی ہے


مرجع مسلمین وجہانِ تشیع حضرت آیۃ اللہ العظمیٰ الحاج حافظ بشیر حسین نجفی دام ظلہ الوارف نےمرکزی دفتر نجف اشرف میں ملاقات کو آئیں آسٹریلیا کی سفیرمحترمہ گانلی اوران کے ہمراہ وفد سےفرمایا کہ دونوں ملکوں کےدرمیان آپسی تعلقات کو دونوں ملکوں کی عوام کی مصلحتوں کو مد نظررکھ  کرمزید مضبوط کیا جائے اورآج  کی دنیا  کوبےروزگاری کےخاتمے،صناعت اورزراعت کےمیدان میں ترقی کے لئےعراق کےساتھ کھڑا ہونا چاہئے۔
 مرجع عالی قدردام ظلہ الوارف نےامید کا اظہارکیا کہ عراق مکمل استقلالیت اوراہل وطن کےدرمیان باہمی اتحاد واتفاق اورسیاست کے میدان میں بھی اپنے پیروں پرکھڑا رہیگا،انہوں نے مزید فرمایا کہ ہم ہران کوششوں کوخیرمقدم کہتےہیں کہ جس کے نتیجے میں اقتصاد، زراعت،صناعت کے شعبوں  میں عراق کے ساتھ تعاون ہو،انہوں نے  دونوں ملکوں کو دعوت دی کہ وہ دونوں ملکوں کی عوام کی مصلحتوں کو مد نظررکھتے ہوئےحقیقی عملی اقدام پر گامزن رہیں۔
مرجع عالی قدردام ظلہ الوارف نے اس ملاقات  میں انسان،اسکے مقدسات،ان کی ثقافت، انکےعقائد اورانکی شناخت و پہچان کی رعایت   پر تاکید فرماتے ہوئے بیان کیا کہ ادیان سماویہ کےماننے والوں کا ہدف الحاد کی روک تھام،انسان کا احترام،ظلم سے بیزاری اور اسکا قلع قمع ہونا چاہئےساتھ ساتھ انسانیت کے درمیان کسی بھی طرح کی  فردی،اجتماعی یا ملکی گروہ بندی کو ہوا نہیں دیا جانا چاہئے، انہوں نےمزید فرمایا کہ نجف اشرف کا ادیان سماویہ کے ماننے والوں سے  آپسی بات چیت میں بڑا کردارہے۔
مرجع عالی قدردام ظلہ الوارف نےعراق اورنجف اشرف کی تاریخ اور اسکی قداست بیان کرتےہوئےفرمایا کہ یہ ہمیشہ رعایت کےلئے حاضر  ہےاورعراق میں اقلیتوں کےحقوق کی حفاظت میں سرگرم عمل ہے   اسلئےعراق میں چاہےوہ کسی بھی دین ومذہب کا ماننےوالا ہواسے اپنے مذہبی رسومات کی ادائیگی کی اپنے دین کی پابندی کی حدود میں   مکمل آزادی ہے۔
اپنی جانب سےمہمان سفیرہ نےمرکزی دفتر کے وابستگان کاحسن استقبال پرشکریہ ادا کرتے ہوئےنصیحتوں اور قیمتی وقت دینے پر مرجع عالی قدر دام ظلہ الوارف  کا بھی شکریہ ادا کیا اورعراق میں اپنے ڈیپلومیٹیک عمل اور نجف اشرف کی زیارت کو اپنےلئے سعادت  سے تعبیرکرتے ہوئےدونوں ملکوں کےدرمیان تعلقات کومزید مستحکم اور مضبوط کرنے کےعزم کا اظہارکیا۔